پٹرول کی بڑھتی قیمتیں اور اپوزیشن کا کردار 

396

جس طرح گزشتہ چند ماہ سے پٹرول کی قیمتیں مسلسل بڑھ رہی ہیں اسی مناسبت سے عوام کی زندگی بھی مزید مشکلات کا شکار ہوتی جارہی ہے لیکن شاباش ہے ہمارے ان تمام اپوزیشن کے سیاسی قائدین کو جو عوام کے ہمدرد تو بنتے ہیں لیکن اس بنیادی مسئلے پر سوائے اخبارات میں روایتی بیان دینے کہ انہیں کوئی دلچسپی نہیں ہوتی بلکہ ایسا لگتا ہے ان تمام قائدیں نے ایک بیان لکھ کر اخبارات کو دے دیا ہے کہ جب بھی پٹرول کی قیمت بڑھے تو آپ چھاپ دیا کریں کے پٹرول کی قیمتیں بڑھانا ظلم ہے اس سے مہنگائی کا سیلاب آئے گا عوام کی زندگی مزید اجیرن ہو جائے گی وغیرہ وغیرہ یہ وہ روایتی جملے ہیں جو ہر ماہ پٹرول کی قیمتیں بڑھنے پر اخبارات کی زینت بنتے ہیں اس طرح وہ اپنا حق بھی ادا کر دیتے ہیں اور اسی طرح اپنے اس فرض کی ادائیگی کے بعد اقتدار کس طرح حاصل کیا جائے اس جنگ میں مصروف ہوجاتے ہیں اور حکومت کو اپنے رہنماؤں کے مقدمات سے دلچسپی ہے کہ وہ کسی طرح وہ باعزات بری ہوجائے اور رہے عوام وہ بھی قیمتیں بڑھنے کے بعد دو دن حکومت کو برا بھلا کہہ کر اپنا فرض پورا کر دیتے ہیں اور یہ سلسلہ اسی طرح چلتا رہے گا لگتا ہے نہ عوام کو تبدیل ہونا ہے نہ اپوزیشن تبدیل ہوگی نہ ہی حکومت کو تبدیل ہونا ہے بس ہم سب کو لفاظی کرکے بے فکر ہوجانا ہے جب کہ کسی قوم کی حالت اس وقت تک نہیں بدلتی جب تک وہ خود تبدیل نہ ہونا چاہے پتا نہیں ہم کب تبدیل ہونے کی سنجیدگی سے کوشش کریں گے۔
محمد شاہد،لانڈھی چراغ ہوٹل کراچی
shahid.m1713@gmail.com

Print Friendly, PDF & Email
حصہ