اقتدار نہ ملا تو تمام پول کھول دوں گا‘ نواز شریف

636
اسلام آباد ، سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف پنجاب ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں
اسلام آباد ، سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف پنجاب ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں

اسلام آباد(آن لائن)سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف نے کہاہے کہ ن لیگ کو اقتدار میں آنے سے روکاگیا تو سینے میں دفن تمام راز فاش کردوں گا۔ سعودی عرب میں کئی روزہ قیام کے بعد وطن واپسی پراسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے عوامی مینڈیٹ کو روند کر مسترد شدہ عناصر کو اقتدار میں لانے کی کوشش کی جارہی ہے،ہمیں روک کر لاڈلے کا راستہ ہموار کیا جارہا ہے ۔ نوازشریف نے خبردار کیا کہ کسی لاڈلے کے لیے ڈیل یا ڈھیل کا انتظام نہ کیا جائے ، پس پردہ کارروائیاں نہ رکیں تو سینے میں دفن راز عوام کے سامنے لے آؤں گا، 3بار وزیراعظم رہا ہوں ، تمام حقائق جانتاہوں ، عوام کو بتاؤں گا یہاں کیا کچھ ہوتا رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ 2018ء انتخابات کا سال ہے لیکن ہمارے خلاف سازشیں ہورہی ہیں، ماضی میں بھی انہی قوتوں نے عوامی مینڈیٹ اور رائے کو ہمیشہ بدلنے کی کوشش کی ،یہ قوتیں کبھی کسی جماعت کاراستہ روک لیتی ہیں اور کبھی کسی جماعت کو عوام پر مسلط کردیتی ہیں،یہ اپنی قوتوں کی بدولت ہے کہ 17سال سے ہم دہشت گردی کے خلاف عظیم قربانیاں دے رہے ہیں لیکن دنیا ماننے کو تیار نہیں۔2001ء میں ملک میں ایک جمہوری حکومت ہوتی تو اپنی خدمات کبھی نہ بیچتی،یوں اپنی خودی کا سودا نہ کرتی،ہم نے ہزاروں فوجی،پولیس اہلکار حتی کہ اپنے معصوم بچوں کی بھی قربانیاں دیں لیکن امریکی صدر ہمیں دھمکیاں دے رہا ہے،میں کہتا ہوں کہ ہمیں سب سے پہلے اپنے گھر پر توجہ دینی چاہیے،میں جب بھی گھر پر توجہ دینے کی بات کرتا ہوں تو میری حب الوطنی پر سوالات اٹھائے جاتے ہیں،آج دنیا آپ کی بات نہیں سن رہی،نوازشریف نے کہا کہ میں واضح کردینا چاہتا ہوں کہ اس بار میری بات نظرانداز کی گئی تونقصان ہوگا،پاکستان دولخت اسی وجہ سے ہوا کہ ہم خود فریبی میں مبتلا رہے،سچائی کو نظرانداز کیا،خود فریبی سے باہر نکلنا ہی ہماری اصل خارجہ پالیسی ہونی چاہیے،قوم میرے سوالوں کا جواب تلاش کرے،سب لوگوں کو خود احتسابی کے عمل سے گزرنا ہوگا۔سابق وزیراعظم نے مزید کہا کہ قیام پاکستان کے بعد سے اصل مسئلہ صاف وشفاف انتخابات کا انعقاد رہا ہے،پہلے انتخابات23 سال بعد ہوئے جسے ان قوتوں نے تسلیم نہیں کیا،ان قوتوں کا یہ وتیرہ ہے کہ انہوں نے آج تک حقیقی انتخابی تنائج کو تسلیم نہیں کیا لیکن اب ایسا نہیں ہوگا،کسی کو عوامی مینڈیٹ تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دیں گے،عوامی رائے کے خلاف کسی کو مسلط کرنے کی ہر کوشش ناکام بناؤں گا اور اگر میری گزارشات کو نہ مانا گیا تو اسی اسلام آباد میں چاروں صوبوں کے قائدین کو اکٹھا کرکے سارے راز فاش کردوں گا۔قبل ازیں نوازشریف اپنی بیٹی اور داماد کے ہمراہ احتساب عدالت میں پیش ہوئے جہاں استغاثہ کے 3گواہوں کے بیان قلمبند کر کے سماعت 9 جنوری تک ملتوی کردی اور مزید 6 گواہوں کی طلبی کے سمن جاری کردیے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ