کاٹن کی ڈیوٹی فری درآمد تباہ کن ہوسکتی ہے 

44

ملتان(اے پی پی )پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی ا ے) کے چیئرمین حاجی محمد اکرم نے سابق چیئرمین شہزادعلی خان و مسعود اے مجید اورمہیش کمارکے ہمراہ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں کاٹن کی ڈیوٹی فری امپورٹ ملکی معیشت کے لیے انتہا ئی تباہ کن ہو سکتی ہے ۔ کاٹن ا سٹاک جنرز کے پاس موجودبہت زیادہ ہے اور ابھی کپاس کی فصل کی آمد کا سلسلہ کاٹن فیکٹریوں میں جاری ہے ۔حکومت اگر ٹیکسٹائل انڈسٹری کو بجلی و گیس اور ٹیکسوں کے نرخوں میں کمی کر کے ان کو فائدہ دے تو زیادہ بہتر ہے اور یہ فائدہ ساری انڈسٹری کو ہوگا ۔ انہوں نے وزارت خزانہ اور وزارت نیشنل فوڈ سکیورٹی اینڈ ریسرچ کے حکام سے گذارش کی کہ کاٹن کی موجودہ ڈیوٹی کو بر قرار رکھا جائے تاکہ ملکی کاشتکار اور جنرز کو ریلیف مل سکے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ