شکست۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ علامہ اقبالؒ 

43

مجاہدانہ حرارت رہی نہ صوفی میں
بہانہ بے عملی کا بنی شراب الست
گریز کشمکش زندگی سے مردوں کی
اگر شکست نہیں ہے تو اور کیا ہے شکست

Print Friendly, PDF & Email
حصہ