کافی،، سے چلنے والی بسیں

92

کافی پینے کا شوق تو بہت سے لوگ رکھتے ہیں۔ لیکن، اگر آپ کے کافی پینے سے شہر کی بسیں چلنے لگیں؟ ہے نا عجیب سا خیال۔ لندن کی ایک کمپنی نے اس عجیب و غریب خیال کو حقیقت بنا دیا ہے، کیونکہ لندن کی بسیں اب استعمال شدہ کافی سے بنے ایندھن پر بھی چل رہی ہیں۔
’بائیو بین‘ نامی کمپنی پورے ملک سے ہزاروں ٹن استعمال شدہ کافی جمع کرتی ہے اور کیمبرج شائر میں واقع اس پلانٹ میں پھر اس کافی سے بائیو فیول بنایا جاتا ہے۔ ’بایو بین‘ کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں ہر سال تقریباً 5 لاکھ ٹن استعمال شدہ کافی مل سکتی ہے۔
لندن کے بس سسٹم کی کچھ بسیں کوکنگ آئل اور جانوروں کی چربی سے بنے بائیو ڈیزل سے بھی چل رہی ہیں۔ اور اب ایک تہائی بسیں کافی فیول سے چلیں گی۔ لیکن، بایو بین کی بنیاد رکھنے والے آرتھر کے چاہتے ہیں کہ لندن کی تمام بسیں کافی فیول سے چلیں۔ ان کا کہنا ہے کہ کافی دنیا کا سب سے مشہور مشروب ہے اور کئی ملین ٹن استعمال شدہ کافی ہر سال ضائع ہو جاتی ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ پیسہ بھی کم خرچ ہو اور کاربن ڈائی آکسائید کا اخراج بھی نہ ہو۔ تو وہ وقت دور نہیں جب آپ اور آپ کی گاڑی دونوں کو صبح دفتر جانے کے لیے کافی کی ضرورت ہوگی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ