بھارت میں دم ہے تو پاکستانی کشمیر چھین لے‘ فاروق عبداللہ

69

نئی دہلی (صباح نیوز) مقبوضہ کشمیر کے سابق کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ بھارت میں دم ہے تو پاکستانی کشمیر چھین لے‘ بھارت کے سابق وزیر اعظم واجپائی نے پاکستان کو پیش کش کی تھی کہ ایل او سی ٹھیک کرکے پاکستان آزاد کشمیر رکھ لے اور ہم یہ (مقبوضہ کشمیر) رکھ لیں گے۔ نئی دہلی میں انڈیا ٹو ڈے کی تقریب میں اظہار خیال کرتے ہوئے فاروق عبداللہ نے کہاکہ واجپائی جی جب بس کے ذریعے پاکستان گئے تو انہوں نے مجھے دہلی بلایا‘ واجپائی جی نے مجھے بتایا کہ میں جا رہا ہوں‘ میں نے کہا کہ
مبارک ہو‘ جب واپس آگئے تو میں نے پوچھا کہ آپ نے پاکستان میں کیا کیا؟ واجپائی جی نے بتایا کہ میں نے وہاں کے حکمرانوں کو بتایا کہ تم کشمیر کا یہ حصہ رکھ لو اور ہم وہ رکھ لیتے ہیں اور ایل او سی کو ٹھیک کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ اگر واجپائی اگلا الیکشن جیت جاتے تو وہ اس معاملے کو ضرور بہتری کی طرف لے جاتے۔ فاروق عبداللہ نے کشمیریوں کو مسئلہ کشمیر کا پہلا فریق قرار دیتے ہوئے کہا کہ جب جنرل پرویز مشرف یہاں آئے تھے اور اشوکا ہوٹل میں کھانے پر ہماری ملاقات ہوئی۔ جب مجھے مشرف صاحب سے ملایا گیا تو کہا گیا کہ یہ تھرڈ پارٹی ہے۔ میں نے کہا کہ جناب میں تھرڈ پارٹی نہیں بلکہ فرسٹ پارٹی ہوں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ