بھارتی فوج نے محاصرے اور تلاشی کی کارروائیوں میں 5کشمیریوں کو شہید کردیا

259

سری نگر(خبر ایجنسیاں) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائیوں کے دوران جمعرات کو بڈگام اور سوپور کے علاقے میں مزید 5کشمیری نوجوانوں کو شہید اورمتعدد کو زخمی کر دیا۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق فوجیوں نے 4نوجوانوں کو ضلع بڈگا م کے علاقے پکھر پورہ میں فٹلی پورہ کے مقام پر محاصرے اور تلاشی کی کارروائیوں کے دوران شہید کیاجبکہ قابض فورسز نے ایک اور نوجوان کو سوپور کے علاقے ساگی پورہ میں محاصرے کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔ آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں فوجی کارروائی جاری تھی۔ دوسری جانب بھارتی فوج نے واقعات کے خلاف احتجاجی مظاہرین پر پیلٹ گنوں سے فائرنگ اور شیلنگ جس کے نتیجے میں بچے سمیت درجنوں افراد زخمی ہو گئے۔ دریں اثنا کٹھ پتلی انتظامیہ نے احتجاجی مظاہرے روکنے کے لیے بڈگام اور پلوامہ کے اضلاع میں موبائل اورانٹرنیٹ سروس معطل کر دی ہے۔علاوہ ازیں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے بھارتی فوجی کے ہاتھوں پکھرپورہ بڈگام اور سگھی پورہ سوپور میں شہید ہونے والے 5نوجوانوں کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیری نوجوان اپنی قوم کی مظلومیت اور محکومیت ختم کرنے کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم پر بھاری ذمے داری عاید ہوتی ہے کہ ہم ان قربانیوں کی لاج رکھتے ہوئے مقصد کے حصول تک جدوجہد کو ہر قیمت پر جاری وساری رکھیں۔ سید علی گیلانی نے کہا کہ جموں کشمیر میں بھارت جو نسل کشی کررہاہے اس پر عالمی برادری کی خاموشی افسوسناک ہے۔سید علی گیلانی نے کہا کہ بھارت کی ضد اور ہٹ دھرمی کی وجہ سے جموں کشمیر میں قیمتی انسانی زندگیوں کا اتلاف مسلسل جاری ہے ۔ جموں کشمیر پیپلز فریڈم لیگ کے ترجمان نے بھی پکھرپورہ بڈگام اور سگی پورہ سوپورہ میں شہید ہونے والے نوجوانوں کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیری شہدا کی عظیم قربانیوں کے طفیل ہی تنازع کشمیر ایک فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہوچکا ہے۔ ادھرمقبوضہ کشمیر میں ہائیکورٹ نے 10افراد کی کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت نظر بندی کالعدم قرار دیتے ہوئے قابض انتظامیہ کو انہیں فوراًرہا کرنے کے احکامات دیے۔ ہائیکورٹ کے مختلف بینچوں نے دانش احمد ڈار، سجاد احمد میر، ثنا اللہ ڈار، شیخ دانش مشتاق، سلمان یوسف صوفی، نذیر احمد راتھر، محمد رستم بٹ، دانش فاروق بٹ، غلا م احمد پرے اور عمر حجام پر لاگوکالا قانون پی ایس اے کالعدم قرار دیا ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ