حکومت پاکستان بنگلادیش میں پھانسیوں کا معاملہ عالمی سطح پر اٹھائے‘ سراج الحق

167
کوئٹہ: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق اور صوبائی امیر عبدالحق ہاشمی بلاک شناختی کارڈ کے حوالے سے قبائلی عمائدین کے احتجاجی کیمپ میں اظہار یکجہتی کررہے ہیں
کوئٹہ: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق اور صوبائی امیر عبدالحق ہاشمی بلاک شناختی کارڈ کے حوالے سے قبائلی عمائدین کے احتجاجی کیمپ میں اظہار یکجہتی کررہے ہیں

کوئٹہ(نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کوئٹہ پریس کلب کے ساتھ نادراکے نارواسلوک کے خلاف اور معذورافرادکا اپنے حقوق کے لیے لگائے گئے احتجاجی کیمپس کا الگ ا لگ دورہ کرکے احتجاج پر بیٹھے افراد سے اظہار یکجہتی کیا ۔اس موقع پر جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مولانا عبدالحق ہاشمی ،جنرل سیکرٹری ہدایت الرحمن بلوچ ،صوبائی انفارمیشن سیکرٹری عبدالولی خان شاکر ودیگر بھی تھے ۔جماعت اسلامی پاکستان کے مرکز منصورہ لاہور سے جاری اعلامیے کے مطابق نئے شناختی کارڈ کے اجرا وشناختی کارڈبلاک وبند کرنے کے حوالے سے احتجاج پربیٹھے افراد نے سینیٹرسراج الحق کو بتایا کہ نئے شناختی کارڈ بنانے کے حوالے سے بلوچستان کے عوام کے ساتھ نادراحکام زیادتی کر رہے ہیں ۔ نت نئے مطالبات اور نارواشرائط لگائی جاتی ہیں بوڑھے بزرگ اورخواتین سمیت عام افراد کے شناختی کارڈ برسوں میں نہیں بنتے دوسری طرف شناختی کارڈ کو بلاک وبند کرکے عوام کو بلاوجہ دلدل اور مشکل میں پھنسادیتے ہیں، حکومت بلوچستان کے تمام اضلاع میں لوکل سرٹیفکیٹ کے اجرا کے لیے لوکل کمیٹیوں میں تمام قوموں کو نمائندگی دیں ،اسٹیٹ کے اندر ضلعی سطح پر قائم اسٹیٹس کا فی الفورخاتمہ کیا جائے ۔نئے اوربلاک شدہ شناختی کارڈ کے عمل کو تیز تر وآسان بنایا جائے، نادرابلوچستان کے عملے اورڈی جی نادرابلوچستان کے قومیت کی بنا پر نادراکی خودساختہ شرائط ختم کر دی جائیں ۔بعدازاں سینیٹر سراج الحق نے وفد کے ہمراہ معذور افراد کے کیمپ کا دورہ کیا۔ معذورافرادکے ذمے داران نے مطالبات پیش کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے معذوروں کو کوئی رعایت سہولت وآسانی فراہم نہیں کی ،معذور افراد2 وقت کی روٹی، روزگاراور تعلیم کے لیے ترس رہے ہیں ،معذوروں کے لیے حکومت انکم سپورٹ پروگرام شروع کرے، معذوروں کو ٹرائی موٹرسائیکل ویل چیئرز،آلہ سماعت ودیگر لازمی ضروری اشیا فراہم کی جائیں ،تعلیمی اداروں ،این جی اوزمیں معذوروں کے لیے کوٹہ فراہم کرتے ہوئے اس پرعمل درآمد یقینی بنائیں ۔معذورافراد کی تعلیمی ضروریات کا بندوبست کرتے ہوئے خصوصی گرانٹ وپیکج کااعلان کیا جائے ۔سینیٹرسراج الحق نے کہا کہ بدقسمتی سے حکومت عوام سمیت معذورطلبہ ،بیواؤں ،یتیموں کے مسائل کی طرف توجہ نہیں دے رہی جس کی وجہ سے عوام سمیت دیگرطبقات بھی متاثر ہیں۔ حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے نادرابلوچستان وخیبر پختونخوا کے عوام سے شناخت بھی چھینناچاہتی ہے شناختی کارڈ میں کوئی نہ کوئی مسئلہ پیداکرکے شہریوں کومہینوں سالوں نادرادفاتر کے چکرلگانے پر مجبور کردیتاہے جس کی وجہ سے عوام کو ملازمتوں ،بینک اکاؤنٹس ،تعلیم ،علاج سمیت معاشی معاشرتی مسائل میں الجھا دیا جاتا ہے، مظلوم عوام سے شناخت چھیننے کا عمل قابل مذمت ہے ۔ انہوں نے کہاکہ میں نے بارہا حکام بالا سے اس عوامی مسئلے پر بات کی ہے ،آئندہ بھی وزارت داخلہ سمیت اعلیٰ حکام سمیت سینیٹ میں بھی اس مسئلے پرآوازبلند کروں گا حکومت اپنے عوام کو شناختی کارڈ بنانے میں آسانی پیدا کرے ، بندا وربلاک شدہ شناختی کارڈ زکے عمل کو سہل بناکر عوام کو آسانی فراہم کی جائے۔ شناختی کارڈ بنانے کے عمل کو مشکل تر بناکر اپنے ہی عوام کو مہاجر کارڈ بنانے پر مجبورنہ کریں ۔انہوں نے کہاکہ معذورافراد کے حکومت ومعاشرے پر بہت زیادہ حقوق ہیں مگر بدقسمتی سے حکومت نہ معذور افراد کو آسانی دے رہی ہے اور نہ ہی ان کے مسائل کو حل کر رہی ہے ۔
***
لاہور (نمائندہ جسارت)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے بنگلا دیش میں حسینہ واجد حکومت کی طرف سے جماعت اسلامی کے مزید 6 قائدین کو پھانسی کی سزا سنائے جانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیاہے کہ فوری طور پر عالمی سطح پر اس مسئلے کو اٹھایا جائے اور ان پھانسیوں کو رکوانے کے لیے عالمی برادری سے تعاون کی اپیل کی جائے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ نام نہاد جنگی جرائم ٹریبونلز کی طرف سے جماعت اسلامی کے مرکزی قائدین سمیت درجنوں رہنماؤں کو محض پاکستان سے محبت اور وفاداری کے جرم میں پھانسیاں دی گئی ہیں، اب ایک بار پھر وہی کھیل کھیلا جارہاہے لیکن حکومت پاکستان مجرمانہ خاموشی اختیار کیے ہوئے ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان بھارت اور بنگلا دیش کے درمیان سہ فریقی معاہدے کو عالمی عدالت میں پیش کیا جائے ،جس میں فریقین نے 1971 ء کی جنگ اور علیحدگی کے واقعات کی بنا پر کسی کو سزا نہ دینے اور عام معافی کا اعلان کیاتھا ۔دریں اثنا سینیٹرسراج الحق اور لیاقت بلوچ نے دہشت گردی کے خلاف لڑتے ہوئے شہادت پانے والے میجر اسحق کی شہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے شہید کے خاندان سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیاہے ۔ انہوں نے شہید کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہاکہ شہید پر پوری قوم کو فخر ہے اور شہدا کا خاندان قوم کے ماتھے کا جھومر ہے ۔

حصہ