قائداعظم انٹرڈپارٹمنٹل فٹبال ٹورنامنٹ متنازع بن گیا

20

کراچی(اسٹاف رپورٹر )سابق فیفا ریفری احمد جان نے کہا ہے کہ قائد اعظم انٹر ڈیپارٹمنٹل فٹ بال ٹورنامنٹ سے ملک میں کھیل کو فروغ حاصل ہوگا، خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس ملک میں قومی سطح کافٹ بال ٹورنامنٹ کا انعقاد بہت ضروری ہے کیونکہ پاکستان پر فیفا کی پابندی لگائی ہوئی ہے جس سے فٹ بال کے کھلاڑیوں کا نقصان ہو رہا ہے اور عہدیداروں کو کوئی فرق نہیں پڑ رہا‘ وہ اپنی، اپنی کرسیوں کے چکر میں ہیں، انہوں نے کہا کہ پاکستانی کھلاڑی کسی بھی انٹرنیشنل سطح پر ٹورنامنٹس میں شرکت نہیں کر سکتے، اس لیے قائد اعظم ڈیپارٹمنٹل فٹ بال ٹورنامنٹ کیا جا رہا ہے اور قائد اعظم انٹر ڈیپارٹمنٹل فٹ بال ٹورنامنٹ کل سے کے ایم سی اسٹیڈیم کراچی میں شروع ہوگا‘ ٹورنامنٹ کو منعقد کروانے کی منظوری ایڈمنسٹریٹر نے دے دی ہے، انہوں نے کہا کہ فیفا پاکستان پرلگائی گئی پابندی کو ختم کرکے اپنی نگرانی میں انتخابات کروانے کا اعلان کرے۔دوسری طرف سندھ فٹبال ایسوسی ایشن کے سیکریٹر ی رحیم بخش بلوچ نے کلبس ،مقامی کلبس کے آفیشلز اور کھلاڑیوں کو ہدایت کی ہے کہ قائداعظم محمد علی جناح ڈپا ر ٹمنٹل فٹبال ٹورنامنٹ کیلیے سندھ فٹبال ایسوسی ایشن سے اجازت نہیں لی گئی، اس میں غیر قانونی ،غیر رجسٹرڈ ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں، لہذا کوئی بھی کھلاڑی ،آفیشلز اس میں حصہ نہ لیں ،بصورت دیگر کھلاڑیوں ،آفیشلز ،ریفری کے خلاف تادیبی قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔تمام ڈسٹرکٹس فوری طور پر کاروائی کے احکامات جاری کریں۔

حصہ