افغانستان سے دہشتگردی‘ کیپٹن سمیت 2شہید‘ جوابی کارروائی میں 10دہشتگرد مارے گئے

63

راولپنڈی،باجوڑ(صباح نیوز)وفاق کے زیر انتظام علاقے(فاٹا)کی ایجنسی باجوڑ میں پاک افغان سرحد کے قریب قائم چیک پوسٹ پرافغان دہشت گروں کے حملے میں2فوجی جوان شہید جبکہ4زخمی ہوگئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)کے مطابق افغانستان کی جانب سے آنے والے متعدد دہشت گردوں نے پاکستانی علاقے میں پاک افغان سرحد پر قائم پاکستانی چیک پوسٹ پر جدید اسلحے کے ساتھ حملہ کیا جس کے نتیجے میں 2سیکورٹی اہلکار جاں بحق ہو گئے۔شہید ہونے والے افسر کی کیپٹن جنیدحفیظ اورسپاہی کی شناخت رحم کے نام سے ہو ئی ہے تاہم پاک فوج نے بھر پور جوابی کارروائی کرتے ہوئے8سے 10 دہشت گردوں کو ہلاک کردیا جبکہ جوابی کارروائی کے بعد افغا نستان فرار ہونے والے متعدد دہشت گردوں کے بارے میں اطلاعات ہیں کہ وہ زخمی بھی ہوئے۔آئی ایس پی آر کے مطابق حملے میں4اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں۔ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ افغان سرحد سمیت دیگرعلاقوں میں افغان حکومت کی رٹ نہیں ہے،سرحدپرافغان حکومت کا کنٹرول نہ ہونے سے دہشت گردوں کو حملے کر نے میں آسانی ہوتی ہے۔ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ پاکستان،افغان سرحد کے پار سیکورٹی نہ ہونے کی قیمت ادا کررہا ہے،پیر کومزید2جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اپنے حصے کا کام کیا اور تمام علاقہ کلیئر کرا لیا،افغانستان کی طرف سے تمام فریقین کو مزید کوششیں کرنے کی ضرورت ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے افغان سرحد کے قریب باڑ لگائی اور نئی پوسٹیں بنائیں۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ سرحدکے دونوں اطراف فورسز اور شہریوں کی جانیں قیمتی ہیں، افغانستان بارڈر سیکورٹی میں اضافہ کرے۔پاک فوج کے ترجمان نے کہا کہ افغانستان میں دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کے خاتمے کی ضرورت ہے۔

حصہ