نجی اسکولوں نے نئے اوقات کار تسلیم کرنے سے انکارکردیا

31

لاہور(نیوز رپورٹر)پنجاب حکومت کی طرف سے صوبے بھر میں اسموگ کے باعث تبدیل کیے جانے والے سرکاری و نجی اسکولوں کے نئے اوقات کار کو پرائیویٹ اسکولز مالکان نے تسلیم کرنے سے انکار کر دیا ہے جس کے نتیجے میں صوبائی دارالحکومت لاہور کے چند نجی اسکولوں کے مالکان نے طلبا وطالبات حضرت داتا گنج بخش ؒ کے عرس اور حضرت امام حسینؓ کے چہلم کے موقع پر مقامی چھٹی بھی نہیں دی واضح رہے کہ چند روز قبل پنجاب حکومت کی جانب سے شدید سردی، سموگ اور دھند کے باعث سرکاری اور پرائیویٹ سکولوں کے اوقات کار تبدیل کیے گئے سکول 9 بجے کھولنے اور 2:30بجے چھٹی کا حکم دیا گیا، اسکولوں کے اوقات کار تبدیل کرنے کا باضابطہ نوٹیفکیشن بھی جاری کیا گیا، جس پر سرکاری اسکولوں میں عملدرآمد شروع ہوگیا لیکن نجی اسکولز مالکان نے احکامات ماننے سے انکار کر دیا حکومت پنجاب کی جانب سے چہلم اور داتا علی ہجویری کے عرس کے موقع پر سکولوں میں عام تعطیل کا بھی اعلان کیا گیا تھا مگر چند نجی اسکولوں نے حکومتی احکامات ہوا میں اڑا کر سکول کھلے رکھے قربان اینڈ ثریا ایجوکیشنل ٹرسٹ اسکول کے بچوں کو اسکول 7 بجکر 50 منٹ پر بلایا جارہا ہے اور بچوں کو آج عام تعطیل بھی نہیں دی گئی والدین نے مطالبہ کیا ہے کہ پنجاب حکومت قربان اینڈ ثریا ایجوکیشنل ٹرسٹ سکول کی انتظامیہ کو سکولوں کے نئے اوقات کار پر عمل کرنے کا پابند بنائے کیونکہ سردی، دھند اور سموگ کے باعث بچوں کے بیمار ہونے کا خدشہ ہے۔

حصہ