بھارت اور ناٹو کیساتھ مل کر پاکستان میں دہشتگردوں کے ٹھکانے ختم کرنا چاہتے ہیں‘ امریکا

483

برسلز (آن لائن+صباح نیوز) امریکا نے کہا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانے ختم کرنے کے لیے بھارت اورناٹوممالک کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق برسلز میں صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے امریکی وزیر دفاع جیمزمیٹس کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ کی نئی جنوبی ایشیا حکمت عملی علاقائی فورسز کو دوبارہ متحد اور منظم کرنے پر مبنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گرد کے محفوظ ٹھکانوں کے حوالے سے امریکا نے ہمیشہ پاکستان پر دباؤ ڈالا ہے لیکن تنہا ہماری کوشش سے کچھ نہیں ہوسکتا،ہمارے لیے یہ انتہائی اہم ہے کہ ناٹو کے تمام رکن ممالک پاکستان میں دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کے مکمل خاتمے کے لیے مل کر کام کریں۔ علاوہ ازیں برسلز میں ناٹو کے دفاعی وزیروں سے ملاقات کے بعد ناٹو کمانڈر جنرل جان نکلسن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہوں کے حوالے سے پاکستان کا رویہ بالکل بھی تبدیل نہیں ہوا اور نہ ہی وہ تعاون کر رہا ہے، پاکستان ایسے دہشت گردوں کے خلاف بھرپور کارروائیاں کر رہا ہے جو اس کی حکومت کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں، ہم پاکستان سے ایسے دہشت گردوں کے خلاف بھی کارروائی کا مطالبہ کر رہے ہیں جو افغانستان میں اور اتحادیوں پر حملے کر رہے ہیں۔جنرل نکلسن کا کہنا تھا کہ امریکا اپنی سمت کے حوالے سے واضح ہے اور ہم آئندہ چند ہفتوں یا ماہ میں بہت سی تبدیلی کی توقع رکھتے ہیں۔

حصہ