گستاخانہ مواد تشہیر ‘ڈی جی ایف آئی اے سے رپورٹ طلب 

87

اسلام آباد (آئی این پی )اسلام آبا د ہائیکورٹ نے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد تشہیر کیس میں ڈی جی ایف آئی اے سے پیش رفت کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔اب تک کتنے ملزم گرفتار کیے اور کتنے بیرون ملک فرار ہوئے،ملزمان کے موجودہ اسٹیٹس کی رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے۔کیس کی سماعت جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کی۔ ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیگل نے عدالت کو بتایا کہ ہم نے ملزمان گرفتار کر لیے ہیں، چالان ٹرائل کورٹ میں جمع کرا دیا ہے ،عدالت نے ریمارکس د یے کہ اگر متعلقہ ادارے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کی تشہیر کو روک نہیں سکتے تو ان اداروں کے لیے اتنا بجٹ کیوں مختص کیا جاتا ہے، کیس کی سماعت 17 نومبر تک ملتوی کر دی گئی۔انسداد دہشت گردی عدالت میں ججز نظر بندی کیس کی سماعت۔ جج شاہ رخ ارجمند نے کیس کی سماعت کی۔پرویز مشرف کی طرف سے ایڈووکیٹ اختر شاہ عدالت میں پیش ہوئے ،ملزم پرویز مشرف کو پیش نہ کرنے پر عدالت نے ضمانتی مچلکے ضبط کر لیے،ضامن کی طرف سے جرمانے کی رقم جمع کرانے کے بعد عدالت نے مچلکے واپس کر دیے، ضامن مشتاق احمد اور محمد ریاض کی طرف سے 5,5 لاکھ روپے جرمانہ ادا کیا گیا ہے، سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کر دی گئی ۔

حصہ