آٹھ ماہ سے فاروق ستار اسٹیبشلمنٹ کے ذریعے پی ایس پی سے رابطہ میں ہے،مصطفیٰ کمال

97

پاک سرزمین پارٹی کے چیئر مین مصطفیٰ کمال نے کہا کہ تاثر دیا جارہا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ نے فاروق ستار کو اغوا کرکے ان سے یہ پریس کانفرنس کرائی لیکن ایسا نہیں بلکہ 8 ماہ سے فاروق ستار اسٹیبشلمنٹ کے ذریعے پی ایس پی کو ایم کیو ایم میں ضم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

پاک سرزمین پارٹی کے چئیرمین مصطفیٰ کمال نے پاکستان ہاؤس کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آج کی پریس کانفرنس پچھلے 24گھنٹے سے والے کامیڈی شو کا جواب ہے، اہم مسائل ہیں اور میں آج چند اہم حقائق سامنے رکھنا چاہتا ہوں، ہم لوگ چیزیں لیک کرنیو الے نہیں ہیں، ہم سامنے بات کرتے ہیں،پچھلے48گھنٹوں سے ایک شوہورہا ہے، ہم نے فاروق ستار کے ساتھ پریس کانفرنس کی، اس کے چار گھنٹے کے بعد سے باتیں شروع ہوگئیں،

انہوں نے کہا کہ یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ نے فاروق ستار کو اغوا کرکے ان سے یہ پریس کانفرنس کرائی ،انہوں نے کہا کہ تاثر دیا گیا کہ اسٹیبشلمنٹ ایم کیو ایم کو پی ایس پی سے اتحاد پر مجبور کررہی ہے اور یہ سب اسٹیبلشمنٹ پی ایس پی کے لیے کررہی ہے۔

مصطفی کمال نے کہا کہ ایم کیو ایم اور فاروق ستار نے یہ تاثر پورے پاکستانی عوام کے دماغ میں بٹھا دیا کہ پی ایس پی اسٹیبشلمنٹ کی آلہ کار ہے تو ہاں ہمیں اسٹیبشلمنٹ نے بلا کر فاروق ستار سے ملایا اور وہ پہلے سے وہاں بیٹھے ہوئے تھےایم کیو ایم اور فاروق ستار فرمائشی پروگرام کرکے اسٹیبشلمنٹ کے ذریعے ہمیں بلاتے ہیں پاکستان کا کون سا سیاست دان ہے جو اسٹیبشلمنٹ سے بات نہیں کرتا۔

انہوں نے کہا کہ یہ سب پچھلے کچھ گھنٹوں سے نہیں بلکہ 8 ماہ سے فاروق ستار اسٹیبشلمنٹ کے ذریعے پی ایس پی کو ایم کیو ایم میں ضم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ہمارے کارکن اپنی جان ہتھیلی پر رکھ کر اپنا منشور گھر گھر پہنچا رہے ہیں اور یہ حقیقت کے برعکس ہے کہ میں اسٹیبلشمنٹ کا ایجنٹ ہوں۔

حصہ