کلثوم نواز انتخاب چھوڑ کرلندن روانہ،یاسمین راشد کے کاغذات نامزدگی منظور

935

لاہور کے حلقہ این اے 120کے ضمنی انتخاب میں حکمران جماعت ن لیگ  کی امیدوار  اور سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی اہلیہ  بیگم کلثوم نواز آج لندن روانہ ہوگئی ہیں جب کہ انہیں کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے آخری روز سہہ پہر تین بجے الیکشن کمیشن  میں پیش ہونا تھا۔

مصدقہ اطلاعات کے مطابق بیگم  کلثوم نواز پی کے 757سے لندن روانہ ہوئی ہیں اور ان کی واپسی اگلے ماہ 24ستمبر  ہے۔بیگم کلثوم نواز 17ستمبر کو شیڈول ضمنی الیکشن کے روز بھی بیرون ملک ہوں گی اور ن لیگ اپنے امیدوار کی غیر موجودگی میں انتخابی مہم  چلائے گی۔

دوسری جانب تحریک انصاف کی امیدوار ڈاکٹر یاسمین راشد پر پی پی امیدوار نے اعتراضات واپس لے لیے ہیں جس کے بعد ڈاکٹر یاسمین راشد کے کاغذات نامزدگی منظور کر لیے گئے ہیں تاہم بیگم کلثوم نواز پر حریف امیدوار یاسمین راشد کے اعتراضات موجود ہیں  اور سابق خاتون اول کی ملک میں عدم موجودگی پر کاغذات کی جانچ پڑتال اور اعتراضات  پر جواب نہ دینے سے کاغذاتی نامزدگی مسترد ہونے کا امکان ہے۔

بیگم کلثوم نواز کی دہری شہریت واقامے سے متعلق الیکشن کمیشن کو تاحال ثبوت فراہم نہیں کیے جاسکے،مصدقہ دستاویزات ملنے کے بعد سابق خاتون اول کوقانون کے مطابق نااہل قرار دیا جاسکتا ہے۔

الیکشن کمیشن ذرائع نے دبے الفاظ میں عندیہ دے دیا ہے۔الیکشن کمیشن کے ذرائع کے مطابق لاہور کے حلقہ این اے120 میں مسلم لیگ(ن) کی جانب سے سابق وزیراعظم کی اہلیہ کلثوم نواز کو بطور امیدوار نامزد کرنے کے بعد ان کے اقامے کے حوالے سے مبینہ تفصیلات بھی منظر عام پر آگئی ہیں۔

ذرائع کے مطابق اگر کلثوم نواز دہری شہریت کی حامل نکلیں تو ان کے کاغذات نامزدگی مسترد ہوسکتے ہیں تاہم حکمران جماعت نے بیگم کلثوم نواز کے اقامے کو جعلی قرار دیا ہے اوران کے مخالفین بھی ابھی تک الیکشن کمیشن کو مصدقہ دستاویزات فراہم کرنے میں ناکام رہے ہیں۔ذرائع کے مطابق اس وقت پارلیمنٹ ہاؤس میں بیٹھے ہوئے اکثریتی ار کان دہری شہریت کے حامل ہیں تاہم الیکشن کمیشن نے ابھی تک ارکان کے کاغذات نامزدگی کو دوبارہ چیک کرنے کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ