جنرل قمر آرمی چیف اور جنرل زبیر جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی تعینات

95

صدر پاکستان ممنون حسین نے وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی سفارش پر دو لیفٹیننٹ جنرلز کو جنرل کے عہدے پر ترقتی دے دی ۔ ترقی پانی والوں میں جنرل قمر جاوید باجوہ اور جنرل زبیر حیات شامل ہیں ۔ جنرل قمر جاوید باجوہ کو چیف آف آرمی اسٹاف جبکہ جنرل زبیر حیات کو چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی تعینات کیا ہے ۔

وزیراعظم ہاﺅس کے ترجمان کے کے بیان کے مطابق وزیراعظم محمد نواز شریف کی ایڈوائس پر صدر مملکت ممنون حسین نے لیفٹیننٹ جنرل زبیر محمود حیات اور لیفٹیننٹ جنرل قمر جاوید باجوہ کو جنرل کے عہدے پر ترقی دے دی ہے۔ ترجمان وزیراعظم ہاؤس کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ کو نئے آرمی چیف اور جنرل زبیر حیات کو چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاک کمیٹی نامزد کیا گیا ہے ۔

نئے مقرر ہونے والے چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 24 اکتوبر 1980ءکو 16 بلوچ ریجمنٹ میں کمیشن حاصل کیا۔ وہ کینیڈین فورس کمانڈ، سٹاف کالج (ٹورنٹو) کینیڈا، نیول پوسٹ گریجویٹ یونیورسٹی مونٹریری (کیلیفورنیا) امریکہ اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد کے گریجویٹ ہیں۔

قمر جاوید باجوہ سکول آف انفنٹری اینڈ ٹیکنیکس کوئٹہ، کمانڈ اینڈ سٹاف کالج کوئٹہ اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں انسٹرکٹر بھی رہ چکے ہیں۔ وہ انفنٹری بریگیڈ کے بریگیڈیئر میجر اور راولپنڈی کور کے چیف آف سٹاف بھی رہ چکے ہیں۔ قمر جاوید باجوہ کے پاس 16ویں بلوچ ریجمنٹ انفنٹری بریگیڈ اور شمالی علاقہ جات میں انفنٹری ڈویژن کی کمان بھی رہی۔ انہوں نے کانگو میں پاکستانی فوجی دستے کی کمان بھی سنبھالی۔ وہ راولپنڈی کور کے کور کمانڈر بھی رہے اور اس وقت جی ایچ کیو میں انسپکٹر جنرل ٹریننگ و ایویلوایشن کے عہدے پر فائز ہیں۔

نئے مقرر ہونے والے چیئرمین جائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات نے 24 اکتوبر 1980ءکو آرٹلری رجمنٹ میں کمیشن لیا۔ وہ فورٹ سیل اوکلو ہوم امریکہ، کمانڈ اینڈ سٹاف کالج کیمبرلے برطانیہ اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد کے گریجویٹ ہیں۔ وہ کمانڈ، سٹاف اور سٹرکشنل تقرریوں کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں۔ ان کے پاس آرٹلری ریجمنٹ، مشینری ڈویژن آرٹلری، ایک انفنٹری برج اور ایک انفنٹری ڈویژن کی کمان رہی ہے۔

جنرل زبیر حیات پی ایم اے میں ایڈجوائنٹ، انفنٹری بریگیڈ کے میجر اور برطانیہ میں پاکستانی سفارتخانہ میں آرمی اور فضائیہ کے مشیر بھی رہ چکے ہیں۔ وہ سٹرائک کور کے چیف آف سٹاف، چیف آف آرمی سٹاف کے پرائیویٹ سیکرٹری اور جی ایچ کیو میں اسٹاف اسٹڈیز ڈائریکٹوریٹ کے ڈائریکٹر جنرل کے عہدوں پر بھی فائز رہے ہیں۔ وہ سٹریٹجک پلان ڈویژن کے ڈائریکٹر جنرل بھی مقرر ہوئے۔ انہوں نے بہاولپور کور 31ویں کمانڈر بھی رہ چکے ہیں اور اس وقت جی ایچ کیو میں چیف آف جنرل سٹاف کے عہدے پر تعینات تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ