ذاکر نائیک کی گرفتاری کے لئے انٹرپول سے مدد لینے کا فیصلہ

273

بین الاقوامی شہرت یافتہ معروف اسلامک اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک اور ان کے ادارے اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن (آئی آر ایف) کے خلاف بھارتی حکومت کے اقدامات جاری ہیں اور اب ذاکر نائیک کو انٹرپول کے ذریعے وطن واپس لانے کی منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق ملکی دفاع کی ذمہ دار ادارے نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کی جانب سے دنیا بھر میں مسلمانوں کی تعلیمات اور دین اسلام کو اجاگر کرنے والے مبلغ ڈاکٹر ذاکر نائیک پر پابندی لگانے کے بعد ان کی تنظیم کو غیر قانونی قرار دیے جانے کے بعد اب انٹرپول کے ذریعے سے ان کو واپس بھارت لانے کی منصوبہ بندی کی جارہی ہے جبکہ اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کی ویب سائیٹ کو بھی حکام نے بند کردیا ہے۔

nia

حکام کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ آئی آر ایف کی ویب سائیٹ پر قابل اعتراض مواد موجود ہے جس کی وجہ سے ویب بند کردی گئی ہے اور جلد ہی حکومت اس تنظیم کے فیس بک پیچز اور یوٹیوب چینلز کے خلاف بھی کارروائی کرے گی۔

این آئی اے نے فیصلہ کیا ہے کہ اگر ڈاکٹر ذاکر نائیک اپنے خلاف درج مقدمات کو لڑنے واپس نہیں آتے ہیں تو ان کو انٹرپول کے ذریعے واپس لایا جائے گا اور ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کئے جائیں گے جبکہ ایجنسی کوشش کرے گی کہ انٹرپول نوٹس جاری کرے تاکہ سعودی عرب ان کو بھارت کے حوالے کرے۔

irf

حکام نے اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کے بینک اکاؤنٹس بھی منجمد کردیے ہیں جو کہ تنظیم اپنے انتظامی امور چلانے کے لئے اور اپنے ادارے میں کام کرنے والے افراد اور مینیجرزکو تنخواہیں دینے کے لئے استعمال کرتی تھی۔

دوسری جانب ڈاکٹر ذاکر نائیک کے وکیل موبین سولکر کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی نے میرے موکل کے خلاف غیر قانونی کارروائیوں میں ملوث ہونے کے الزامات عائد کرتے ہوئے مختلف مقدمات درج کئے ہیں، مقدمات میں دو جماعتوں کو لسانیت و علاقائی بنیادوں پر لڑانے اور انتشار پھیلانے کی دفعات شامل کی گئیں ہیں۔

واضح رہے ڈاکٹر ذاکر نائیک اور ان کی تنظیم اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کےخلاف اس وقت کریک ڈاؤن شروع ہوا جب ڈھاکا حملہ کے  گرفتار دہشت گردوں نے بیان دیا کہ انھوں نے ریسٹورنٹ پر حملہ ذاکر نائیک کی تقریروں سے متاثر ہوکرکیا تھا۔ بنگلہ دیش میں معروف اسکالر کو بہت مقبولیت حاصل ہے۔ اس سلسلے میں ڈاکٹر ذاکر نائیک کی جانب سے دوہزار الفاظ پر مشتمل ایک طویل خط بھارتی حکومت کو لکھا گیا جس میں استدعا کی گئی ہے کہ اس معاملے کی صحیح طور پر تحقیقات کرائیں جائیں جو کہ سچائی اور حقائق پر مبنی ہوں۔

icpo

یاد رہے انٹرنیشنل کریمنل پولیس آرگنائزیشن (انٹرپول) ایک عالمی تنظیم ہے جس کی ذمہ داریوں میں دنیا بھر میں دہشت گردی، انسانوں، منشیات اور اسلحے کی اسمگلنگ، منی لانڈرنگ اور مالی بدعنوانی سمیت دیگر جرائم کی روک تھام کرنا ہے ۔  یہ آرگنائزیشن بین الاقوامی سطح پر مجرموں کی گرفتاری کے لئے بھی مدد فراہم کرتی ہے۔

zakir-naik

علاوہ ازیں ڈاکٹر ذاکر نائیک کو دنیا بھر میں اپنے مفید اور پر اثر تقاریر کی وجہ سے شہرت حاصل ہے۔ دنیا میں اسلامی تعلیمات کو پھیلانے کے لئے ان کی تنظیم اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کلیدی کردار ادا کررہی ہے۔ یہ آرگنائزیشن غیرمسلم اور مسلمانوں کی رہنمائی کے لئےمخلتف ٹی وی چینلز چلارہی ہے ۔ پیس ٹی وی اردو، انگریزی اور چینی زبانوں میں اپنی نشریات چلاتا ہے۔ ان تمام چینلز کو بین الاقوامی سطح پر مقبولیت حاصل ہے۔

dhaka-attack

دو جولائی 2016 کو بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکا میں قائم ایک کیفے میں سات شدت پسندوں نے حملہ کیا تھا اور بیس غیر ملکی افراد کو ہلاک کردیا تھا۔ بنگلہ دیش کی فورسز اور شدت پسندوں کے درمیان بارہ گھنٹے پر محیط فائرنگ کا سلسلہ جاری رہا تھا جس کے نتیجے میں چھ شدت پسند ہلاک اور ایک کو زخمی حالت میں گرفتار کیا گیا تھا جبکہ فوج کے دو اہلکار جاں بحق اور تیس کے قریب زخمی ہوئے تھے اور اس حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ نے قبول کی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ