پاناما لیکس،حسن،حسین اور مریم نوازکسی کے زیرکفالت نہیں،جواب داخل

229

پانام لیکس کیس میں وزیراعظم میاں نوازشریف  کے بچوں نے سپریم کورٹ میں جواب داخل کرادیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ حسن،حسین اور مریم نواز بالغ اورا نڈی پینڈنٹ ہیں اور یہ تینوں افراد کسی کے زیر کفالت نہیں۔

جواب میں کہا گیا ہے کہ حسن ،حسین اور مریم نواز کوئی عوامی عہدہ نہیں رکھتے جب کہ حسن اور حسین کئی سالوں سے بیرون ملک مقیم ہیں اور وہیں قانونی طریقے سے اپنے کاروبار کوچلارہے ہیں۔

جواب کے مطابق مریم نوازاپنے والد کی زیر کفالت نہیں اور نہ ہی وہ 2011میں اپنے والد کی زیر کفالت تھیں۔

تفصیلات کے مطابق عدالت عظمیٰ میں چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں 5رکنی لارجر بنچ پاناما لیکس کی تحقیقات سے متعلق جماعت اسلامی،تحریک انصاف اور عوامی مسلم لیگ کی درخواستوں پر آج سماعت کررہا ہے۔

سپریم کورٹ نے گزشتہ سماعت پر حکمران جماعت کے وکیل سلمان بٹ کو وزیراعظم کے صاحبزادے حسن نواز، حسین نواز اور صاحبزادی مریم نواز کے جوابات جمع کرانے کے لئے انہیں آج تک کی مہلت دی تھی ۔

وزیر اعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن صفدر اور سمدھی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے جوابات داخل کرادئیے ہیں، جن میں تحریک انصاف کی درخواست میں اٹھائے گئے نکات اور الزامات سے انکار کرتے ہوئے درخواستیں مسترد کرنے کی استدعا کی ہے۔

عدالتی حکم پر تحریک انصاف جماعت اسلامی اپنے ٹی او آرز جمع کرا چکے ہیں۔

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا کہ وزیراعظم خود کو احتساب کے لیے پیش کرچکے ہیں۔

اس موقع پر ن لیگ کے رہنما طارق فضل چوہدری نے کہا کہ تحریک انصاف سڑکوں پر عدالت لگانے کی بہت شوقین ہے،پی ٹی آئی سے گزارش ہے کہ ایک وقت میں ایک ہی عدالت لگائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ