پ?ول گوب?? غذائ?ت س? ب?ر پور ر?ش? دار سبز? ??،ما?ر?ن سبز?ات

390

کاشتکار اگیتی پھول گوبھی نمبر ایک کی پنیری 15 جون تک کاشت اور جولائی کے پہلے ہفتہ میں کھیتوں میں منتقل کر سکتے ہیں جبکہ اگیتی نمبر دو پنیری کی کاشت کا بہترین وقت یکم جولائی سے 15جولائی تک ہے۔ ماہرین سبزیات ایوب ریسرچ فیصل آباد نے بتایا کہ پھول گوبھی غذائیت سے بھر پور ریشہ دار سبزی ہے جس میں کاربوہائیڈریٹس ، شوگر، سوڈیم، وٹامنز، نمکیات، فیٹی ایسڈ اور امائنو ایسڈ وغیرہ شامل ہیں۔

انہوں نے بتایاکہ پھول گوبھی وٹامن سی ، مینگا نیز، بیٹا کیروٹین اور فیرولک ایسڈ کا اچھا ذریعہ ہونے کی وجہ سے دل اور کینسر جیسی بیماریوں کے خطرہ کو کم کرتی ہے۔انہوں نے بتایا ہے کہ پھول گوبھی سرد مرطوب آ ب وہوا میں اچھی پیداوار دیتی ہے کیونکہ پھول گوبھی کےلئے مناسب درجہ حرارت 17سے18ڈگری سینٹی گریڈ ہے لیکن پکنے کے وقت اگر درجہ حرارت 20ڈگری سینٹی گریڈ سے زیادہ ہوجائے تو اس کی نشوونما پر برااثر پڑتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ اگر درجہ حرارت 30 ڈگری سینٹی گریڈ سے زیادہ ہو جائے تو سبز پتیاں نکل آتی ہیں جس سے پھول کی کوالٹی بری طرح متاثر ہوتی ہے نیزپھول گوبھی اچھے نکاس والی ذرخیز میرا زمین میں اچھی پیداوار دیتی ہے۔انہوںنے بتایاکہ اگیتی گوبھی نمبر 1 پنیری کی کاشت کا وقت 15جون تک ہے اور پنیری کا وقت جولائی کا پہلا ہفتہ ہے جبکہ اس کی برداشت ستمبر، اکتوبر ہے اسی طرح اگیتی نمبر 2پنیری کی کاشت کا وقت یکم جولائی سے 15جولائی تک ہے جبکہ پنیری منتقلی کا وقت اگست کا آخری ہفتہ اوربرداشت کا وقت نومبر ،دسمبر ہے۔

انہوں نے بتایاکہ اگیتی اقسام کےلئے ایک کلوگرام بیج جبکہ درمیانی اور پچھیتی اقسام کےلئے آدھ کلو بیج فی ایکڑ کافی ہوتا ہے۔ انہوںنے بتایاکہ جون میں سخت گرمی کے سبب اگیتی اقسام کی پنیری اگانا بہت مشکل کام ہے لہٰذاکاشتکار ذرخیز اور نامیاتی مادوں سے بھر پور زمین کا انتخاب کریںتاہم زمین آبپاشی کےلئے پانی ہر لحاظ سے موزوں ہواور پھپھوند ی والی بیماریوں سے پاک ہو۔