سر?نگر: ب? ج? پ? مسلمانو? ?و ختم ?رن? ?? منصوب?پرعمل پ?را?? ، فورم گ?لان?

86

مقبوضہ کشمیرمیں بزرگ حریت رہنماءسید علی گیلانی کی سرپرستی میں قائم فورم نے جموںڈویژن میں مسلمانوں کی اراضی پر جبری قبضے پرشدید تشویش ظاہر کی ہے ۔ فورم نے اس کارروائی کو کشمیر میں آر ایس ایس کے ایجنڈے پر عمل درآمد کی واضح مثال قراردیا ہے۔

 کشمیر میڈیا سروس کے مطابق فورم کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ بی جے پی جموں ڈویژن کو اپنامفتوحہ علاقہ سمجھتی ہے اور ہر ممکن طریقے سے علاقے کے مسلمانوں کو ہراساں کیا جارہا ہے۔ فورم نے کہاکہ بی جے پی جموں میں مسلمانوں کا صفایا کرنے کے منصوبے پر کام کر رہی ہے۔ ترجمان نے کہاکہ بعض مقامات پر مسلمانوں کی اراضی کو جنگل کی زمین قراردےدیا جاتا ہے توکہیں کوئی اور بہانہ بنا کرانہیں وہاں سے بے دخل کرنے کی کوششیں کی جارہی ہےں۔

انہوں نے کہاکہ اس صورتحال کی وجہ سے پورے جموں ڈویژن میں مسلمان شدید خوف و ہراس کا شکار ہیں۔ حریت رہنماﺅں محمد یوسف نقاش اور عبدالاحد پرہ نے اپنے الگ الگ بیانات میں کہاہے کہ سنگھ پریوار نے مقبوضہ علاقے کے مسلمانوں کے خلاف ہر سمت سے خوفناک سازشیں شروع کر دی ہیں۔انکا کہنا تھا کہ نے لوگوں پر زوردیا کہ وہ جموں کشمیرمیں آر ایس ایس کی مذموم سازشوں سے باخبر رہیں۔ جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے نائب چیئرمین شوکت احمد بخشی نے سرینگر میں پارٹی کارکنوں کے ہمراہ گرفتاریاں پیش کرنے سے قبل کہاکہ کٹھ پتلی انتظامیہ مقبوضہ علاقے میں سیاسی سرگرمیوں پر قدغن عائد کر کے تشدد کو ہوا دے رہی ہے ۔لبریشن فرنٹ کے رہنماءاور کارکن جاری جیل بھرومہم کے دوران گرفتاریاں دینے سے پہلے سرائے بالا سرینگر میں جمع ہوئے اور امیرا کدل پل کی طرف مارچ کیا ۔ گرفتاریاں پیش کرنے والوں کو سرینگر سینٹرل جیل منتقل کردیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ