?ر?ان? م?? ?ندوؤ ? ن? مسجد ?و نذر آتش ?رد?ا

95

نئی دہلی: بھارتی ریاست ہریانہ میں جنونی ہندوؤں نے زیر تعمیر مسجد کو شہید کردیا، انتہا پسند ہندوؤں نےفرید پور میں 20 سے زائد مکانات کو بھی نذر آتش کیا ، مسجد کی تعمیر پانچ سال قبل شروع ہوئی تھی۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق ہریانہ کے علاقے فرید پور میں پانچ سال قبل ایک معاہدے کے تحت باہمی صلاح مشورے سے بیک وقت مسجد اور مندر کی تعمیر کا آغاز کیا گیا تھا مگر اراضی تنازعے کے سبب مسجد کی تعمیر روک دی گئی تھی رواں ماہ عدالت کا فیصلہ مسلمانوں کے حق میں آیا جس کے بعد دوبارہ مسجد کی تعمیر کا آغاز کردیا گیا تھا ۔

نیوز ایجنسی کے مطابق دوران تعمیر جنونی ہندو مسجد میں داخل ہوئے اور پٹرول چھڑک کر مسجد کے متعدد حصے کو نذر آتش کردیا واقعے کی اطلاع ملتے ہی مسلمانوں کی بڑی تعداد جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی اسی دوران انتہا پسند ہندو جماعت راشٹریہ سیوک سنگ (آر ایس ایس) کے کارکنوں اور مسلمانوں کے درمیان جھڑپیں شروع ہوگئی جس کے نتیجے میں سترہ سے زائد مسلمان زخمی ہوگئے جن میں دو کی حالت نازک بتائی جاتی ہے ۔

آر ایس ایس کے غنڈوں نے فرید پور میں مسلمانوں کی املاک کو لوٹ کر ان کے گھروں کو آگ لگادی اطلاعات کے مطابق اب تک بیس سے زائد مسلمانوں کے گھروں کو نذر آتش کیا جاچکا ہے ۔

ادھر پولیس کمشنر ہریانہ کے مطابق متاثرہ خاندان کو عارضی طور پر ایڈیشنل کمشنر کے دفتر میں عارضی طور پر منتقل کردیا گیا ہے اور پولیس کے 500 سے زائد اہلکاروں کو فرید پور کے متاثرہ علاقوں مین تعنیات کردیا گیا ہے تاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچا جاسکے ۔

آخری اطلاعات کے مطابق علاقے میں ابھی تک حالات انتہائی کشیدہ ہے اور مقامی مسلم آبادی میں شدید خوف وہراس پایاجاتا ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ