فرو? فلائ? س? نم?ن? ??لئ? جنگ? بن?ادو? پر اقدامات، محم?? زراعت

95

محکمہ زراعت پنجاب نے آم کی برآمد کے حوالے سے یورپی یونین کی پابندی کے خدشہ کے پیش نظر جنگی بنیادوں پر آم کے باغات سے فروٹ فلائی کے خاتمہ کی مہم شروع کر دی ہے۔

          محکمہ زراعت پنجاب نے آم کے زمینداروں و کاشتکاروں کو ہدایت کی ہے کہ پھلوں کے بادشاہ آم پر مکھی کے حملہ کے باعث فصل کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے۔ لہذا تدارکی اقدامات کو بروئے کار لاتے ہوئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کریں تا کہ بڑے نقصان سے بچا جا سکے۔

محکمہ زراعت کے ذرائع نے اتوار کے روز بتایا کہ پھل پر مکھی کے حملہ کے باعث آم کا معیار بری طرح متاثر ہوتا ہے، جس کے تدارک کےلئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرنا ناگزیر ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ آم کے پھل کی مکھی نہ صرف آم کو براہ راست نقصان پہنچاتی ہے بلکہ پھل میں اس کے انڈوں اور کیڑوں کی موجودگی آم کے معیار کو بے حد متاثر کرتی ہے جس سے بیرونی منڈیوں میں برآمدی آرڈرز میں نہ صرف رکاوٹ پیدا ہوتی ہے بلکہ اس کی مقبولیت پر بھی منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ امریکہ ، جاپان، تائیوان، کوریا اور یورپی ممالک پاکستانی آم کو اپنے ممالک میں درآمدکرنے کی اجازت نہیں دیتے۔انہوں نے مزید بتایا کہ ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن کے مطابق بین الااقوامی مارکیٹ میں پھلوں کے معیار کا اندازہ زہراور کیڑوں کے اثرات سے پاک ہونے کی بنیاد پر لگایا جاتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ